تم کیسی محبت کرتی ہو؟

تم جہاں پے بیٹھ کے جاتی ہو
جس چیز کو ہاتھ لگاتی ہو
میں وہیں پے بیٹھا رہتا ہوں
اس چیز کو چھوتا رہتا ہوں
میں ایسی محبت کرتا ہوں
تم کیسی محبت کرتی ہو؟
تم جس سے ہنس کے ملتی ہو
میں اسکو دوست بناتا ہوں
تم جس رستے پر چلتی ہو
میں اس سے آتا جاتا ہوں
میں ایسی محبت کرتا ہوں
تم کیسی محبت کرتی ہو؟
تم جنکو دیکھتی رہتی ہو
وہ خواب سرہانے رکھتا ہوں
تم سے ملنے جلنے کے
کتنے ہی بہانے رکھتا ہوں
میں ایسی محبت کرتا ہوں
تم کیسی محبت کرتی ہو؟
کچھ خواب سجا کے آنکھوں میں
پلکوں سے موتی چنتا ہوں
کو‏ئی لمس اگر چھو جاۓ تو
میں پہروں اسکو سوچتا ہوں
میں ایسی محبت کرتا ہوں
تم کیسی محبت کرتی ہو؟
جن لوگوں میں تم رہتی ہو
تم جن سے باتیں کرتی ہو
تم جن سے ہنس کے ملتی ہو
جو تم کو اچھے لگتے ہیں
وہ مجھ کو اچھے لگتے ہیں
میں ایسی محبت کرتا ہوں
تم کیسی محبت کرتی ہو؟
جس باغ میں صبح کو جاتی ہو
جس سبزے پر تم چلتی ہو
جو شاخ تمہیں چھو جاتی ہے
جو خوشبو تم کو بھاتی ہے
وہ اوس تمہارے چہرے پر
جو قطرہ قطرہ گرتی ہے
وہ تتلی چھوڑ کے پھولوں کو
جو تم سے ملنے آتی ہے
جو تم کو چھونے آتی ہے
ان سب کے نازک جزبوں میں
میری دھڑکن بستی ہے
میری روح بھی شامل رہتی ہے
تم پاس رہو یا دور رہو
نظروں میںشامل رہتی ہو
میں تم کو تکتا رہتا ہوں
میں تم کو سوچتا رہتا ہوں
میں ایسی محبت کرتا ہوں
تم کیسی محبت کرتی ہو؟
ہرموقعے پر ہر منظر میں
میں ساتھ تمہارے رہتا ہوں
میں چشم تصور میں اکثر
بس تم کو دیکھتا رہتا ہوں
میں ایسی محبت کرتا ہوں
تم کیسی محبت کرتی ہو؟

This entry was posted in Uncategorized. Bookmark the permalink.

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out /  Change )

Google photo

You are commenting using your Google account. Log Out /  Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out /  Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out /  Change )

Connecting to %s